VIDOZEE

Babul Ka Angna - Episode 43 | HAR PAL GEO - Vidozee

Babul Ka Angna - Episode 43 | HAR PAL GEO
HAR PAL GEO — Published 6 months ago
Likes: 103 — Dislikes: 26
28, 893 views

Description

Babul Ka Angna - Episode 43 | HAR PAL GEO
Babul Ka Angna is the story of Mehwish, a young girl who dreams is to complete her higher studies and create her own identity. Her father support this dream but her mother, like the typical norms of society, wants her to get married and settle down as this will enable her younger sister Sehrish to get married also.

Mehwish is lucky, as a young, rich and charming man ...

Embed & Share

  • Facebook Share
  • Twitter Share
  • WhatsApp Share

Keywords

Comments

Marwa Super Creation
Marwa Super Creation I m New Pakistani youtuber please sub ki help cheya
AlFajar TV
AlFajar TV آئن سٹائن کے فارمولے نے مسلمانوں کی صدیوں کی بحث کو خاموش کر دیا
دنیا میں ایک طرف اہل دانش ہیں،غور کرنے والے جن کا مقام یہ ہے کہ اللہ خود اُن سے اپنی کتاب قرآن مجید میں خطاب کرتا ہے اور انہیں اپنی کائنات میں غور و فکر کرنے کی دعوت دیتا ہے۔
اور دوسری طرف بحث کرنے والے اور لڑنے جھگڑنے والے ہیں جن کی عقلوں پر خود بھی پردہ پڑا رہتا ہے اور ان کے ساتھی بھی بصارت سے محروم ہی رہتے ہیں۔
البرٹ آئن سٹائن کے نام سے دنیا واقف ہے، ۤآئن سٹائن 20 ویں صدی کے سب سے بڑے طبیعات دان تھے جو جرمنی کے شہر اولم میں 1879 میں پیدا ہوئے اور 1955 میں انتقال کیا۔
اپنی 75 سال کی مختصر زندگی میں آئن سٹائن نے ایسی کئی تھیوریز لکھیں جن کو فزکس کی دنیا میں کبھی فراموش نہیں کیا جا سکتا انہیں تھیوریز میں سے ایک تھیوری کا ذکر آج ہم اس پوسٹ میں کریں گے۔
E = mc2
صدیوں سے مسلمانون کے دو مکتبہ فکر کے دوران ایک نا ختم ہونے والی بحث و تکرار کی جنگ جاری تھی ، علما اور مولوی حضرات کے ایک دھڑے کا کہنا تھا کہ اللہ کے نبی حضرت محمدﷺ بشر تھے لحاظہ مٹی سے پیدا کئے گئے، اور دوسرے دھڑے کا کہنا تھا آپﷺ نور ہیں اور نور سے پیدا کئے گئے۔
دونوں مکتبہ فکر کے حضرات کے دوران یہ بحث صدیوں سے جاری تھی اور اس بحث نے دونوں کو کئی دفعہ خاک اور خون چٹایا تھا مگر دونوں کبھی کسی ایک بات پر متفق نہیں ہوئے تھے ایک کہتا تھا بس نور ہیں ایک کہتا تھا بشر ہیں تو نور نہیں ہو سکتے اور اپنے اپنے معمبر پر بیٹھ کر دونوں طرف سے شعلہ بیان ایسے شعلے لگاتے تھے کہ آگ ایک دوسرے کے گھروں تک پہنچ جاتی تھی۔
اور پھر ان دونوں کی صدیوں پرانی بحث کو آئن سٹائن نے صرف یہ لکھ کر خاموش کر دیا E= mc2،
فزکس کے اس فارمولے میں آئن سٹائن نے یہ راز سب کو بتا دیا کے ہر جسم جو وجود رکھتا ہے اُس کو نور میں تبدیل کیا جا سکتا ہے،آسان الفاط میں آئن سٹائن کے فارمولے کے مطابق کسی بھی جسم کو اگر روشنی کی رفتار سے ضرب دے دی جائے یعنی اُسے روشنی کی رفتار سے سفر کروایا جائے تو وہ ٹھوس جسم انرجی یعنی نور میں تبدیل ہو جائے گا، روشنی کی رفتار تقریبا 300،000 کلومیٹر فی سکینڈ ہے اور اگر اس سپیڈ سے انسان سفر کرے تو انسان کی مٹی سے بنا ہوا جسم نور میں بدل جائے ۔
وہ نور بھی ہے اور بشر ہے ،،میرا پیعمبر عظیم تر ہے
alia khan
alia khan I love geo dramas
<